حاضِری کا رَجِسْٹَر {حا + ضِری + کا + رَجِس + ٹَر}

عربی زبان سے ماخوذ اسم حاضری کے بعد کا بطور حرف اضافت لگا کر انگریزی سے ماخوذ اسم رجسٹر اردو میں عربی رسم الخط کے ساتھ لگانے سے مرکب بنا۔ اردو میں بطور اسم استعمال ہوتا ہے اور تحریراً سب سے پہلے 1886ء کو "دستورالعمل مدرسین دیہاتی" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم نکرہ (مذکر - واحد)

واحد غیر ندائی: حاضِری کے رَجِسْٹَر {حا + ضِری + کے + رَجِس + ٹَر}

جمع: حاضِری کے رَجِسْٹَر {حا + ضِری + کے + رَجِس + ٹَر}

جمع غیر ندائی: حاضِری کے رَجِسْٹَروں {حا + ضِری + کے + رَجِس + ٹَروں (و مجہول)}

معانیترميم

1. ایسی بیاض، کاپی یا رجسٹر جس میں کام پر آنے والوں یا طالب علموں کے نام اور آنے کی یادداشت تاریخ وار درج کی جاتی ہے۔

"کوئی حاضری کا رجسٹر تو تھا نہیں اور نہ غیر حاضری کا جرمانہ دینا پڑتا تھا۔"، [1]

انگریزی ترجمہترميم

a register of attendance, a master-roll

حوالہ جاتترميم

  1. ( 1936ء، پریم چند، پریم چالیسی، 94:1 )