حُسْنِ اَخْلاق {حُس + نے + اَخ + لاق} (عربی)

عربی زبان سے ماخوذ اسم حسن کے آخر پر کسرہ اضافت لگا کر عربی سے ہی ماخوذ اسم خلق کی جمع اخلاق لگانے سے مرکب اضافی حسن اخلاق بنا۔ اردو میں عربی سے ماخوذ ہے اور بطور اسم مستعمل ہے 1865ء کو "خطوط غالب" میں مستعمل ملتا ہے۔

اسم کیفیت (مذکر - واحد)

معانیترميم

1. ملنساری، تواضع، خوش خلقی۔

"حسن اخلاق اور حسن انتظام کا یہ طرز عمل صرف محمد بن قاسم تک محدود نہ تھا"۔، [1]

انگریزی ترجمہترميم

approvable manners, affability, courtesy, politeness

مترادفاتترميم

خُوش خُلْقی، مِلَنْساری

حوالہ جاتترميم

  1. ( 1977ء، ہندی اردو تنازع، 63 )