حَدِیث خواں {حَدِیث +خاں (و معدولہ)}

عربی زبان سے ماخوذ اسم حدیث کے ساتھ فارسی مصدر خواندن سے مشتق صیغۂ امر خواں بطور لاحقۂ فاعلی لگنے سے "حدیث خواں" بنا۔ اردو میں بطور اسم مستعمل ہے۔ 1900ء میں "شریف زادہ" میں مستعمل ملتا ہے۔

صفت ذاتی (واحد)

معانیترميم

1. { اثنا عشری } نثر میں مجلس پڑھنے والا۔

"مجلس میں مرثیہ خواں، سوز خواں اور حدیث خواں، روضہ خواں، کتاب خواں وغیرہ کو نقد روپیہ، دوشالے اور رو مال تقسیم ہوتے تھے"۔، [1]

حوالہ جاتترميم

  1. ( 1937ء، بیگمات شایان اودھ، 42 )