ٹِمْٹِمانا {ٹِم + ٹِما + نا} (سنسکرت)

ستم، ٹم، ٹِمْٹِمانا

سنسکرت کے اصل لفظ ستم سے ماخوذ اردو لفظ ٹم کی تکرار سے اردو زبان میں ٹمٹم بنا اس کے ساتھ اردو قواعد کے مطابق ا لگا کر اردو لاحقۂ مصدر نا لگانے سے ٹمٹمانا بنا اردو میں بطور مصدر مستعمل ہے 1879ء میں "مسدس حالی" میں مستعمل ملتا ہے۔

فعل لازم

معانیترميم

1. جھلملانا، کم کم روشنی دینا، ستاروں کی سی روشنی دینا، چراغ بجھنے کے قریب ہونا۔

"دروازے پر ایک لالٹین ٹمٹما رہی تھی"، [1]

2. (آنکھوں کے ساتھ) ذراسی آنکھیں کولنا اور بند کر لینا۔

"دلہن نے ذراسی آنکھیں ٹمٹما کے پھر بند کر لیں"، [2]

فعل کی حالتیں

ٹِمْٹِمانا {ٹِم + ٹِما +نا}ٹِمْٹِمانے {ٹِم + ٹِما +نے} ،

ٹِمْٹِمانی {ٹِم + ٹِما +نی}ٹِمْٹِماتا {ٹِم + ٹِما +تا} ،

ٹِمْٹِماتے {ٹِم + ٹِما +تے}ٹِمْٹِماتی {ٹِم + ٹِما +تی} ،

ٹِمْٹِماتِیں {ٹِم + ٹِما +تِیں}ٹِمْٹِمایا {ٹِم + ٹِما +یا} ،

ٹِمْٹِمائے {ٹِم + ٹِما +ۓ}ٹِمْٹِمائی {ٹِم + ٹِما +ئی} ،

ٹِمْٹِمائِیں {ٹِم + ٹِما +ئِیں}ٹِمْٹِمایا {ٹِم + ٹِما +یا} ،

ٹِمْٹِمائے {ٹِم + ٹِما +ۓ}ٹِمْٹِمائیں {ٹِم + ٹِما +ئیں(ی مجہول)} ،

ٹِمْٹِماؤُں {ٹِم + ٹِما +ؤُں}ٹِمْٹِما {ٹِم + ٹِما} ،

ٹِمْٹِماؤ {ٹِم + ٹِما +ؤ(و مجہول)}ٹِمْٹِمائِیو {ٹِم + ٹِما +ئِیو(و مجہول)} ،

ٹِمْٹِمائِیے {ٹِم + ٹِما +ئِیے}

انگریزی ترجمہترميم

to give a faint light, to glimmer, to twinkle, to flicker, to be at the last gasp

مترادفاتترميم

جھِلْمِلانا

حوالہ جاتترميم

  1. ( 1935ء دودھ کی قیمت، 148 )
  2. ( 1911ء، قصہ مہر افروز، 57 )