غَزَل {غَزَل} (عربی)

اسم نکرہ

معانیترميم

1. لغوی معنی عورتوں کے ساتھ بات چیت اور عشق بازی (شاعری) وہ صنف سخن جس میں عموماً حسن و عشق، وصال و فراق، شراب و شباب، یاس و حرماں اور تصوف و معرفت وغیرہ کی باتیں کہی جائیں لیکن غزل اس کے حدبندی کی پابند نہیں رہی، اب اس میں ہر قسم کے موضوعات و مسائل نظم کیے جاتے ہیں غزل ہر بحر میں کہی جاتی ہے، اس کا ہر شعر عموماً جداگانہ مضمون کا حامل ہوتا ہے، اس کا پہلا شعر مطلع کہلاتا ہے، جس کے دونوں مصرعے ہم ردیف اور ہم قافیہ ہوتے ہیں۔ باقی اشعار کے مصرع ثانی میں قافیہ ہوتا ہے۔ آخری شعر جس میں شاعر کا تخلص ہو مقطع کہلاتا ہے سب سے عمدہ شعر کو شاہ بیت کہتے ہیں۔

انگریزی ترجمہترميم

an amatory poem, an ode, ghazal

مترادفاتترميم

رَہَٹ،

مرکباتترميم

غَزَل خوانی، غَزَل خواں، غَزَل دَرْ غَزَل، غَزَل سَرائی، غَزَل سَنْج، غَزَل گو، غَزَل گوئی، غَزَل مُسَلْسَل، غَزَل نِگار

مزید دیکھیںترميم


فارسیترميم

اسمترميم

غزل

  1. غزل

مرکباتترميم